اہم خبریںپاکستانرپورٹسعودی عربنقطہ نظر

عظمٰی باجی بھی مشکل میں!!

6
0

قانونی ماہرین کی رائے بے شک مختلف ہو مگر بادی النظر میں عدالت کی تشریح محض قانونی ہونا مشکل نظر آتا ہے ۔ عدالت “عظمٰی” ملکی حالات، بیرونی سازش اور اسٹیبلشمنٹ کے موقف کو بھی ملحوظِ خاطر رکھے گی ۔ اس کے ساتھ ساتھ عمران حکومت معاملات کو تہہ بہ تہہ چھوٹا موٹا قانونی تحفظ دے کر اس مقام پر لے گئے ہیں کہ جہاں سے عدالت “عظمٰی” کے لئے ان سب اقدامات کو واپس لینا ایک مشکل فیصلہ نظر آتا ہے یہ صرف حزبِ اختلاف کے لئے نہیں بلکہ قانونی ماہرین اور عدلیہ کے لئے بھی کپتان کا وہ چھکا ہے جو عشروں یاد رکھا جائے گا ۔ لوٹوں کے پیندے غائب ہوچکے ہیں اور اپوزیشن رھنماوں کے سر سے ڈھکن ایک دھماکے سے اڑ چکا ہے ۔ کپتان ایک بیانیے کو ہوا دے کر الیکشن کی بات کررہا ہے جو کہ اس کے مخالفین کو مشکل میں ڈال سکتا ہے ۔ جہاں سیاسی تدبر نہ ہونے اور غلط لوگوں کے انتخاب اور ذاتی ضد اور انّا نے کپتان کو وقت سے پہلے دو زانوں ہونے پر مجبور کیا ہے وہی یہ سیاسی لاپرواہی اور مفاد کی بے فکری کپتان کو ایسے قدم اٹھانے کی اجازت دیتی ہے جو شاید پاکستان کی سیاسی تاریخ کو بدل کر رکھ دے اور سیاسی شعبدہ بازوں اور مفاد پرست عناصر کے لئے ہر گزرتے وقت کے ساتھ گھیرا تنگ کردے ۔

حالات کچھ یوں ہیں کہ

تم اسقدر دور تک نکل گئے ہو سنگدل
کہ اب ہواؤں سے تیری مہک کا ملنا بھی مشکل ہے

اپوزیشن کے پاس نگراں وزیراعظم چننے کے بادل ناخواستہ امر کے سوا شاید کوئی دوسرا حل نہ هو اور یہ بات بھی شائد الیکشن کمشن تک چلی جائے ،اس لیے سیاسی کھلاڑی نے سیاسی مداریوں کے لئے نہ وکٹ چھوڑی نہ پچ نہ میدان بلکہ ایک لق و دق صحرا و بیاباں ۔

جا اپنی حسرتوں پہ آنسو بہا کہ سو جا!

(04-04-2022 10:10 AM ظفر اقبال)

6
0

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Related Articles

Back to top button